تازہ ترین

پروفیسربھیم سنگھ کی کشمیری نوجوانوں سے اپیل

انصاف یقینی بنانے کے لئے تحمل سے کام لیں

21 اپریل 2017 (00 : 02 AM)   
(      )

نیوز ڈیسک
 جموں//نیشنل پنتھرس پارٹی کے سرپرست اعلی پروفیسر بھیم سنگھ نے کشمیری بھائی  بہنوں سے اپنی تحریک میں تحمل سے کام لینے کی اپیل کی جس سے جموں وکشمیر کے تمام لوگوں کو انصاف مل سکے اور وہ وقار کے ساتھ زندگی گزارسکیں۔پنتھرس سربراہ نے ہندستان کے آئین میں جموں وکشمیر کے لوگوں کو بنیادی حقوق نہ دیئے جانے پر افسوس کا اظہار کیا ۔ انہوں نے جموں وکشمیر کے لوگ صرف عارضی دفعہ۔370کی وجہ سے بنیادی حقوق اور آزادی سے محروم ہیں جبکہ ہندستان کے بقیہ تمام شہریوں کو تمام بنیادی حقوق حاصل ہیں۔انہوں نے کہاکہ جموں وکشمیر کے مہاراجہ ہری سنگھ کے ذریعہ 26اکتوبر، 1947کو یونین آف انڈیا کے ساتھ ریاست کے انضمام کی یہاں لوگوں نے حمایت کی تھی۔پروفیسر بھیم سنگھ نے جموں وکشمیر کے لوگوں خاص کر وادی کشمیر کے متاثرہ طلبا اور نوجوانوں کو یقین دلایا کہ ایک دن انہیں بھی بنیادی حقوق حاصل ہوں گے اور وہ بھی وقا ر کے ساتھ زندگی گزار سکیں گے۔انہوں نے جموں وکشمیر کے نوجوانوں اور طلبا کو یقین دلایا کہ پنتھرس اسی مقصد کے تحت قائم کی گئی تھی کہ ریاست کے باشندوں کے لئے بنیادی حقوق یقینی بناسکے اور یہاں کے لوگوں کو ہر طرح کی آزادی  مساوات، برابری اور قانون کی حکمرانی مل سکے جس سے وہ 1947سے محروم ہیں۔پروفیسر بھیم سنگھ نے صدر جمہوریہ پرنب مکھرجی پر زور دیا کہ وہ ہندستانی آئین کے تحت حاصل اختیارات کا استعمال کرتے ہوئے جموں وکشمیر میں گورنر راج نافذ کردیں۔