تازہ ترین

نوجوانوں کو مشغول رکھنے کے پروگرام

وجے کمار نے نگرانی کیلئے ٹاسک فورس تشکیل دینے کی ہدایت دی

13 جولائی 2018 (00 : 01 AM)   
(      )

 سری نگر//گورنر کے مشیر کے وجے کمارنے نوجوانوں کو مشغول رکھنے پر مرکوز مختلف محکموں کی جانب سے متعارف کئے گئے پروگراموں پر نگاہ رکھنے کے لئے ایک سپیشل ٹاسک فورس تشکیل دینے کی ہدایت دی۔اس ٹاسک فورس کے سربراہ سیکرٹری سپورٹس ہوں گے جبکہ صوبائی کمشنر کشمیر ، آئی جی پی کشمیر اور آئی جی پی سی آر پی ایف اس فورس کے ممبران ہوں گے۔یہ کمیٹی ان پروگراموں کی موثر عمل آوری کو یقینی بنائے گی جو نوجوانوں کے لئے مختلف محکمے اور کئی فورسز کی جانب سے عملائے جارہے ہیں۔مشیر موصوف نے ریاست میں نوجوانوں کے لئے عملائے جارہے ان پروگراموں کی صورتحال کا تفصیلی جائزہ لیا۔ انہوں نے کہا کہ ٹاسک فورس نوجوانوں اور مختلف عمل آور ایجنسیوں کے مابین ایک پُل کا کام کرے گاتاکہ ان پروگراموں کا زیادہ سے زیادہ فائدہ مستفیدین تک پہنچ سکیں۔رقومات کو مجتمع کرنے کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے مشیر نے نوجوانوں کو مشغول رکھنے پر مرکوز پروگراموں کی بامعنی عمل آوری کے لئے متعلقہ محکموں اور ایجنسیوں کے مابین استدقاق پر زور دیا ۔انہوں نے رقومات کے منصفانہ استعمال کی بھی تلقین کی۔کے وجے کمارنے کہا کہ کمیٹی کے ممبران مسلسل بنیادوں پر میٹنگیں کریں گے جس دوران وہ ان پروگراموں کی عمل آوری کیلئے کئے جارہے اقدامات کا جائزہ لیں گے۔اس کے علاوہ کمیٹی کے ممبران ریاست کے 142 بلاکوں میں کھیلو انڈیا کے لئے واگزار کی گئی 14.20کروڑ روپے کی رقم کے ثمر آور تصرف کے لئے منصوبہ بھی ترتیب دیں گے۔وجے کمار نے محکمہ کی سرگرمیوں کے منصوبے کا جائزہ لیتے ہوئے نوجوانوں کو غیر تدریسی سرگرمیوں میں بھی مشغول رکھنے کی تلقین کی تاکہ نوجوان اپنی صلاحیتوں کا بھر پور مظاہرہ کرسکیں۔ انہوں نے مرکزی سرکار کی فلیگ شپ سکیم کھیلو انڈیا کی ریاست میں عمل آوری کے بارے میں بھی جانکاری طلب کی۔مشیر موصوف  نے ریاست میں موجودہ کھیل ڈھانچے کے رکھ رکھائو کو یقینی بنانے کے ساتھ ساتھ نئے ڈھانچے کی تعمیر پر بھی زور دیا۔انہوں نے اس سلسلے میں دستیاب رقومات کے منصفانہ استعمال کی تلقین کی۔کے وجے کمار نے محکمہ کے افسران سے کہا کہ وہ ایسے نوجوانوں کی نشاندہی کرکے ان کی حوصلہ افزائی کریں جنہوں نے مختلف کھیل شعبوں میں بہترین کارکردگی کا مظاہرہ کیا ہے تاکہ زیادہ سے زیادہ نوجوانوں ایسی سرگرمیوں کی جانب راغب کئے جاسکیں۔میٹنگ میں ریاست کے لئے سپورٹس پالیسی ترتیب دینے کے معاملے پر بھی غور و خوض کیا گیا جبکہ ریاستی پولیس ، سی آر پی ایف اور بی ایس ایف کی جانب سے کھیل سرگرمیوں کو فروغ دینے کے لئے کئے جارہے اقدامات پر بھی تبادلہ خیال کیا گیا۔