تازہ ترین

شہر میں نکاسی آب کا ناقص نظام

چند گھنٹوں کی بارشوں سے سڑکیں تالابوں میں تبدیل

7 اگست 2018 (43 : 11 PM)   
(      )

اشفاق سعید
سرینگر //شہر میں چند گھنٹوں کی بارش نے انتظامیہ کے تمام دعوئوں کی پول کھول دی ۔ نکا سی آب کا صحیح انتظام نہ ہو نے کی وجہ سے جگہ جگہ پانی جمع ہو گیا اور سڑکیں تا لا بوں کا منظر پیش کر رہی ہیں۔سوموار اور منگل کی درمیانی رات کوشروع ہوئی بارشیں دوپہر تک جاری رہیں ۔چند گھنٹے کی تیز اور موسلادار بارشوں سے شہر کی سڑکیں اور گلی کوچے تالاب کا منظر پیش کرنے لگے جس کے نتیجے میں شہر کے سکولوں میں حاضری کم رہی جبکہ کئی علاقوں میں دکانیں بھی تاخیر سے کھلیں ۔ تیز ہوائوں اور شدید بارشوں سے متعدد علاقوں میں بجلی سپلائی بند رہی۔شہر خاص کے نواکدل علاقے میں تیز ہوائوں سے شادی کی تقریب کیلئے نصب کئی ٹینٹ گرآئے جبکہ تیز بارشوں سے مہمانوں کیلئے تیار کیا گیا وازوان بھی  پانی اپنے ساتھ بہا کر لے گیا ہے۔شہر کے نوپورہ ، صفا کدل ، صراف کدل، عید گاہ ، رعناواری ، نالہ مار روڑ عید گاہ ، صورہ ، ملباغ ، اونتہ بھون ، نوچہر کے علاوہ  ،سمندر باغ ،بر بر شاہ اودیگرعلاقوں کی سڑکیں اور گلے کوچے بھی پانی سے بھرے رہے ۔نوپورہ صفاکدل میں بارشوں کا پانی صحنوں میں جمع ہوگیا جس کی وجہ سے لوگوںکاعبور و مرور مشکل بن گیا۔ سیول لائنز علاقے جن میں جہانگیر چوک ، گھنٹہ گھر ، کوکربازار ،ہری سنگھ ہائی سٹریٹ، بٹہ مالو ، سرائے بالا ، پولو ویو، ریذیڈنسی روڑ ، ریگل چوک ، سونہ وار ، ڈلگیٹ ، کرسو راجباغ کے ساتھ ساتھ نٹی پورہ ، چھانہ پورہ ، برزلہ ، ایچ ایم ٹی ، پارمپورہ ،ہمدانیہ کالونی ، مصطفی آباد ایچ ایم ٹی اور دیگر علاقوں میں سڑکیں زیر آب آگئیں جس کے نتیجے میں راہ گیروں کے ساتھ ساتھ گاڑیوں کو بھی چلنے پھرنے میں دقتوں کا سامنا کرنا پڑاجبکہ متعدد سڑکوں پر ٹریفک جام کے مناظر دیکھے گئے جس کے نتیجے میں طلبا، ملازمین اور دیگر کاروباری اداروں سے وابستہ لوگ وقت پر اپنی منزلوں پر نہ پہنچ سکے جبکہ کئی علاقوں میں ملازمین اور سکولی بچوں کو جوتے اُتار کر پانی سے گزر کر اپنے اپنے مقام پر جاتے ہوئے دیکھا گیا ۔عوامی حلقوں کا الزام ہے کہ شہر کے اکثر علاقے اس وقت بغیرڈرنیج سسٹم کے ہیںاور جن علاقوں میں گندے پانی کی نکاسی کیلئے ڈرنیج سسٹم بنایا گیا ہے تاہم وہ بھی بہتر حالت میں نہیں ہے۔ لوگوں کا کہناہے کہ ناقص منصوبہ بندی کی وجہ سے ڈرنیج سسٹم پوری طرح سے مفلوج ہوچکا ہے اور یہی وجہ ہے کہ شہر میں معمولی بارشیںسے ہی گلی کوچے پانی سے بھر جاتے ہیں ۔