تازہ ترین

یاترا بھی معطل رکھی گئی، 2یاتری فوت

9 جولائی 2018 (00 : 01 AM)   
(      )

اشفاق سعید
 سرینگر //ہڑتال کے دوران احتجاجی مظاہروں کے خدشات کے پیش نظر وادی میں اتوار کو امرناتھ یاتراکو بھی معطل رکھا گیا ۔ وادی میں اتوار کو ممکنہ احتجاجی مظاہروں کے خدشات کے پیش نظر سالانہ امرناتھ یاترا احتیاطاً معطل رکھی گئی ،یہ فیصلہ گو رنر این این ووہرا کی سربراہی والی ایک اعلیٰ سطحی سیکورٹی میٹنگ میں لیا گیا تھا ۔ تقریباً ایک ہزار امر ناتھ یاتریوں کو کٹھوعہ اورپندرہ ہزار یاتروں کو جموں، اودھم پور اور رام بن اضلاع میں روک دیا گیا تھا۔حکام کا کہنا ہے کہ یہ اقدامات احتیاطی طور اور یاتریوں کی حفاظت کو یقینی بنانے کیلئے اٹھائے گئے ۔انہوں نے کہا کہ جموں کے بھگوتی نگر بیس کیمپ سے اتوار کو کسی بھی یاتری کو گپھا کی طرف جانے کی اجازت نہیں دی گئی ۔ ادھر جموں سرینگر شاہراہ سمیت ، پونچھ شوپیاں مغل روڑ کے علاوہ ، کوکرناگ سنتھن ٹاپ سڑکوں کو بھی امن وقانون کے پیش نظر معطل رکھا گیا تھا ۔ادھرتلنگانہ سے تعلق رکھنے والی خاتون یاتری لکشمی بھئی اتوار کی صبح بال تل بیس کیمپ میں دل کا دورہ پڑنے سے انتقال کر گئی۔آندھرا پردیش سے تعلق رکھنے والا ایک یاتری رویندر ناتھ بھی فوت ہوا۔جس کو علیل پڑنے کے بعد سری نگر کے شیر کشمیر انسٹی چیوٹ آف میڈیکل سائنسز (سکمز) میں داخل کرایا گیا تھا، دم توڑ گیا ہے۔ 28 جون سے اب تک قریب 14 یاتریوں کی موت ہوچکی ہے۔