تازہ ترین

کپوارہ،بانڈی پورہ،اونتی پورہ،ٹنگمرگ اور ڈوڈہ میں حادثات

موٹرسائیکل سوار،یاتری خاتون اور2معمرشہری لقمہ اجل

12 جولائی 2018 (00 : 01 AM)   
(      )

اشرف چراغ،سیداعجاز،عارف بلوچ،عازم جان
کپوارہ//شمالی ضلع کپوارہ کے بمہامہ علاقہ اس وقت ایک دلدوز حادثہ پیش آ یا جب ایک 34سالہ نوجوان خیمہ نصب کر نے کے دوران بجلی کرنٹ کو چھونے سے لقمہ اجل بن گئے جبکہ ہندوارہ کے تلواری لنگیٹ میں ایک نوجوان نالہ میں ڈوب کر جا ں بحق ہوگئے ۔دونو ں حادثات کے بعد ان علاقوں میں کہرام مچ گیا ۔معلوم ہو اہے کہ سوپور کے اچھ بل سے تعلق رکھنے والے 34سالہ نوجوان  ریا ض احمد لون بمہامہ علاقہ میں ایک تقریب میں خیمہ نصب کر  رہا تھا جس کے دوران اس نے خمیہ کے کھمبو ں کو کھڑا کیا اور وہ ایک بجلی کی ترسلی لائن سے ٹکرا گیا جس کے دوران ریا ض احمد جھلس گیا ۔مقامی لوگو ں نے فوری طور انہیں مقامی اسپتال پہنچایا تاہم ڈاکٹرو ں نے ریا ض احمد کو مردہ قرار دیا ۔پولیس نے معاملہ کی نسبت کیس درج کر کے تحقیقات شروع کی ۔اس دوران تلواری لنگیٹ میں اس وقت کہرام مچ گیا جب ایک مقامی نوجوان کی لاش کو نالہ میں پایا گیا ۔عینی شاہدین کا کہنا ہے کہ امتیاز احمد بٹ ولد مختار احمد بٹ ساکن ولر ہامہ کی نعش کو نالہ ماور تلواری کے مقام پر پایا گیا ۔مقامی لوگو ں نے فوری طور پولیس کو مطلع کیا جس کے بعد پولیس نے امتیاز حمد کی لاش کو اپنی تحویل میں لیکر قانونی لوازمات پورا کرنے کے بعد لواحقین کے حوالہ کی اور معاملہ کی نسبت کیس درج کیا تاہم مقامی لوگو ں  نے الزام لاگایا کہ نالہ ماوری میں غیر قانونی طور سے ریت اور بجری نکالنے کے دوران نالہ کی گہری بہت ہوئی جس کے نتیجے میں اس نالہ سے گزر نے والے لوگو ں کو خطرہ محسوس ہوتا ہے اور یہ نالہ کئی مقامات پر جھیلو ں کی شکل اختیار کر چکا ہے ۔لوگو ں کا کہنا ہے عدالت اور ضلع انتظامیہ کی پابندی کے با وجود بھی کئی لوگ اپنی من مانی کے ذریعے اس نالہ سے ریت اور بجری نکال کر فرو خت کرتے ہیں اور غیر قانونی طور جے سی بی مشین کا استعمال کر کے نالہ ماوری کے وجود کو خطرے میں ڈال دیتے ہیں ۔مقامی لوگو ں کا کہنا ہے اس حادثہ میں جا ں بحق ہوئے نوجوان امتیاز احمد وہا ں پر مزدوری کرتا تھا جس کے دوران اس کا پیر پھسل گیا اور وہ ایک گہرے سر میں جا گرا جس کی وجہ سے وہ موت کے منہ میں چلا گیا۔مقامی لوگو ں نے بتا یا کہ امتیاز کی موت کے ذمہ دار بھی وہ ہی لوگ ہیں جو غیر قانونی طور ریت اور بجری نکالنے کے چکر میں ہیں ۔اس حوالہ سے ضلع ترقیاتی کمشنر کپوارہ خالد جہانگیر نے بتا یا کہ وہ معاملہ کی نسبت ایک رپورٹ طلب کریں گے تاکہ کوئی قانونی کاروائی عمل میں لائی جائے گی ۔ادھر۔جنوبی کشمیر کے اونتی پورہ علاقے میںبدھوار کے صبح ایک سکولی بس زیر نمبر JK01N-5074وادی سے امر ناتھ پاترا کے بعد واپس جموں جا رہی ایک سوفٹ کا زیر نمبر RJ14C.1772کے درمیان ٹکر ہوا جس کے دوران کار میں سوار تین افراد جن میں ایک خاتون بھی شامل ہے بری طرح زخمی ہوئے جن کو فوری طورنذدیکی اسپتال منتقل کیا گیا گیا جہاں بعد میں خاتون یاتری سمتی زوجہ سرندر چودھری ساکنہ لکشمی نگر جے پور زخموں کی تاب نہ لا کر دم توڑ بیٹھی جبکہ واقعے میں دو یاتری معمولی طور زخمی ہوئے جن کو فوری طور علاج معالجے کے لئے اسپتال منتقل کیا گیا ۔پولیس نے اس حوالے سے ایک کیس درج کر لیا ہے ۔خیال رہے28جون سے جاری شری امر ناتھ یاترا میں اب تک18یاتری جاں بحق ہوئے ہیں جن میں کچھ خواتین بھی شامل ہیں۔اس دوران صدرکوٹ پائین بانڈی پورہ کا ساٹھ سالہ شخص تیز رفتار بس کے چھت سے گرنے کے نتیجے میں موت کا نوالہ بن گیا ہے بتایا جاتا ہے غلام محی الدین گنائی صبح سویرے سرینگر جانے والی بس کے چھت سے گر پڑا ۔ اگرچہ فوری طور پر مقامی ہسپتال پہنچایا گیا ہے لیکن ڈاکٹروں وہاں مردہ قرار دیا ۔ پولیس نے کیس درج کر کے قانونی لوازمات پورا کرنے کے بعد لاش وارثین کے حوالے کی۔دریں اثنائمنگلوار 10 جولائی کی رات نو بجے کے قریب ماگام روڈ پر بمقام واری پورہ میں موٹر سائیکل اور لوڈ کیریر میں ھوئی ٹکر کینتیجے میں موٹر سائیکل پر سوار دو افراد زخمی ہوگئے جن میں سے ایک اسپتال منتقل کرنے کے دران فوت ہوگیا جبکہ دوسرے زخمی شخص کو ماگام سب ڈسٹرکٹ اسپتال سے شدید زخمی حالت میں جے وی سی سرینگر ریفر کیا گیا۔تفصیلات کے مطابق منگلوار رات نو بجے ماگام سے ٹنگمرگ جارہا موٹر سائیکل زیر نمبر JK04A  48 22اور لوڈ کیریر زیر نمبرJKO5E5099 میں زور دار ٹکر ھوئی جس سے موٹر سائیکل پر سوار شبیر احمد خان ولد محمد ابراہیم خان ساکنہ قاضی پورہ ٹنگمرگ اور عابد حسین بٹ ولد غلام قادر بٹ ساکنہ شیری بارہ مولہ شدید زخمی ہوگئے۔اگرچہ دونوں زخمیوں کو فوری طور سب ڈسٹرک اسپتال ماگام منتقل کیا گیا تاہم شبیر احمد خان ساکنہ قاضی پورہ زخموں کی تاب نہ لاکر چل بسا  جبکہ دوسرے زخمی شخص کو تشویشناک حالت میں جے وی سی سرینگر ریفر کیا گیا۔معلوم ہوا ھے کہ شبیر احمد خان تین معصوم بچوں کا باپ تھا  پولیس نے اس سلسلے میں ایک کیس زیر نمبر 73 سال 2018 انڈر سکیشن 279 304A اور 427 درج کرکے تحقیقات شروع کردی ھے ۔اس دوران یور خوشی پورہ قاضی گنڈ میں کمسن لڑکا تیز رفتار سومو کی زد میں آکر ہلاک ہوگیا ہے ۔منگل شام دیر گئے قاضی گنڈ سے کولگام جارہی تیز رفتار سومو گاڑی زیر نمبرJKO2W 1763نے09سالہ محمد الطاف لالی ولد نزاکت علی ساکنہ کھٹوعہ حال یور خوشی پورہ کو ذد میں لاکر ہلاک کر دیا ہے ۔واقع کے خلاف مقامی لوگوں نے بدھ کے روز کولگام قاضی گنڈ سڑک پر دھر نہ دے کر احتجاج کیا ،احتجاجیوں کا کہنا تھا کہ علاقہ سے ہر وقت گاڑیاں تیز رفتاری سے چل رہی ہے جس کے سبب اب تک کئی افراد گاڑیوں کے ذد میں آگئے ہیں ،اُنہوں نے کہاحادثات کی اصل وجہ اورلوڈنگ ہے لہذا ملوث ڈرائیوروں کے خلاف کاروائی ہونی چاہیے ،اس دوران پولیس نے ڈرائیور کو گرفتار کر کے واقع کی نسبت کیس درج کیا ہے ۔