تازہ ترین

۔10نوجوان کی آنکھیں پیلٹ سے متاثر

۔4کی ٹانگوں میں گولیوں کے زخم

11 جولائی 2018 (00 : 01 AM)   
(      )

پرویز احمد
 سرینگر //شوپیاں میں زخمی ہونے والے معتدد افراد میں سے14ابھی بھی زیر علاج ہیں جن میں 4 کو گولیاں لگیں ہیں جبکہ 10جسم کے مختلف حصوں پر پیلٹ لگنے کی وجہ سے زخمی ہوئے ہیں۔ بون اینڈ جوائنٹ اسپتال برزلہ میں 4جبکہ صدر اسپتال سرینگر میں 11افراد کو داخل کیا گیا ہے جن میں 10پیلٹ لگنے کی وجہ سے زخمی ہوئے ہیں جبکہ ایک نوجوان کو فورسز اہلکاروں نے اپنے عتاب کا شکار بنایا ہے۔ صدر اسپتال میں منگل کو کل 11زخمی نوجوانوں کو داخل کیا گیا تھا جن میں 10نوجوان آنکھوں میں پیلٹ لگنے سے زخمی ہوئے تھے جبکہ ایک نوجوانوں فورسز اہلکاروں کی جانب سے زدکوب کئے جانے کی وجہ سے زخمی ہوا تھا۔ آنکھوں میں پیلٹ لگنے سے زخمی ہونے والے نوجوانوں میں عقیل احمد ، باسط احمد اور محمد رفیق  بائیں آنکھ میں پیلٹ لگنے کی وجہ سے زخمی ہوگئے ہیں جبکہ دیگر 6 نوجوان دائیں آنکھ میں پیلٹ لگنے کی وجہ سے زخمی ہوئے ہیں۔ پیلٹ لگنے سے زخمی ہونے والے بیشتر نوجوانوں کو معمولی نویت کے زخم لگے ہیں تاہم مظفر احمد نامی نوجوان کو شدید چوٹیں آئی ہیں۔15سالہ اشفاق احمد نامی نوجوان کو فورسز اہلکاروں نے مارپیٹ کرکے شدید زخمی کردیا ہے۔ میڈیکل سپر انٹنڈنٹ ڈاکٹر سلیم ٹاک نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ  12زخمی نوجوانوں کا اندراج کیا گیا جن میں ایک نوجوان کی موت سر پر گولی لگنے سے ہوئی تھی جبکہ دیگر 11نوجوانوں میں سے 10کی آنکھوں پر پیلٹ لگے ہیںاور ایک 15سالہ نوجوان کو مارپیٹ کرکے شدید زخمی کردیا گیا ہے۔ ادھر سرینگر کے بون اینڈ جوئنٹ اسپتال میں منگلوار کو 4زخمی نوجوانوں کا اندراج کیا گیا ہے جو ٹانگوں پر گولیاں لگنے کی وجہ سے زخمی ہوئے ہیں۔ زخمی ہونے والے 4نوجوانوں میں سے تین کی بائیں ٹانگ کو گولی کا نشانہ بنایا گیا ہے جبکہ ایک نوجوان کی دائیں ٹانگ میں گولی لگی ہے۔ گولی لگنے سے زخمی ہونے والوں میں محمد اشرف ، عاقب احمد ، دانش وانی اور مفصل وانی شامل ہیں۔