تازہ ترین

جونئر انجینئر کو پول کے ساتھ باندھنے کا معاملہ

بنی تھانہ میں 6افراد کیخلاف معاملہ درج، تحقیقات شروع

13 جولائی 2018 (00 : 01 AM)   
(      )

حافظ قریشی
 بنی // محکمہ بجلی کے جونئر انجینئر کو گزشتہ روز بجلی کے پول کے ساتھ باندھے رکھنے کے واقعہ میں بنی پولیس نے 6 افراد کے خلاف مقدمہ درج کر لیا ہے ۔پولیس ذرائع نے بتایا کہ اس سلسلہ میں درج ایف آئی آر نمبر 54/2018 زیر دفعات 353/147 آر پی سی کے تحت   کارروائی شروع کی گئی ہے۔ واضح رہے کہ 10 جولائی کو قریب شام 5 بجے روشن لال ولد جگدیش راج نامی شخص کی ڈوگن گاؤں کے پنالی موڑھا میں کرنٹ لگنے سے موت ہوگئی تھی جب کہ پول میں جاری بجلی کرنٹ کی وجہ سے تین مویشی اورایک پالتو کتے سمیت4جانور بھی ہلاک ہو گئے۔اس واقعہ پر پورے گاؤں میں محکمہ بجلی تئیں لوگوں میں غصہ تھا ۔ بھاری تعداد میں لوگ متوفی روشن لال کے گھر تعزیت کیلئے جمع تھے کہ جونئر انجینئر بھی تعزیت کرنے کے لئے غمزدہ کنبہ کے گھر پہنچ گیا۔غصہ میں آئے لوگوں نے جونئر انجینئر کو بجلی کے پول کے ساتھ باندھ کر احتجاجی مظاہرہ کیا تھا ، ان کا مطالبہ تھا کہ محکمہ بجلی کے خلاف مقدمہ درج کی جائے۔ کچھ بزرگوں کی مداخلت سے جب گائوں والوں کے عتاب کا شکار بنے جونئر انجینئر مظفر شیخ کو رہا کیا گیا تو اس نے بنی تھانہ میں اپنی شکایت درج کروائی جس کے بعد پولیس نے 6 افراد کے خلاف مقدمہ درج کر لیا ہے ۔ دریں اثنا مختلف مقامات پر محکمہ بجلی کے انجینئروں کی طرف سے گائوں والوں کے اس سلوک کی مذمت کرتے ہوئے معاملہ کی تحقیقات کروا کر قصور واروں کو کیفر کردار تک پہنچانے کی مانگ کی گئی ہے ۔ انجینئر ز ایسو سی ایشن کی طرف سے چیف انجینئر کے دفتر کے باہر احتجاج کیا گیا اور معتوب جونئر انجینئر مظفر شیخ کے ساتھ یکجہتی کا اظہار کیا گیا۔