تازہ ترین

ٹی آر سی گریڈ سپریٹراورفلائی اوورپر تعمیراتی کام ٹھپ

تعمیراتی کمپنی پروجیکٹوں کومقررہ مدت کے اندر مکمل کر نے میں ناکام

13 جولائی 2018 (00 : 01 AM)   
(      )

 سرینگر//شہر سرینگر میں زیر تعمیر اہم فلائی اور جہانگیر چوک سے رام باغ اور ٹی آر سی گریڈ سپریٹر کے تعمیراتی کام پھر ایک بار اپنے مقررہ مدت کے اندر پائے تکمیل کو نہ پہنچنے کاخدشہ لاحق ہوا ہے جس کی وجہ سے سڑکوں پر موجود لوہا اور دیگر سازو سامان عوام کے لئے مصیبت کا باعث بن گیا ہے۔شہر سرینگر میںکئی برسوں سے زیر تعمیر2 اہم فلائی اوروں پر کام سست رفتاری سے جاری ہے جس کی وجہ سے خدشہ ظاہر کیا جا رہا ہے کہ دونوں فلائی اور مقرر حد کے اندر پھر ایک بار مکمل نہیں ہوںگے جس کی وجہ سے عوام خاص کر مسافروںکو گزشتہ کئی سال سے درپیش مسائل میں کسی کمی کا کوئی امکان نظر نہیں آ رہا ہے ۔ ذرائع سے معلوم ہوا کہ جہانگیر چوک سے رام باغ اور ٹی آر سی سے پولو ویوفلائی اور پر گزشتہ 2ماہ سے نا معلوم وجوہات کی بناء پر کام کو روک دینے سے متعدد مقامات پر لوہا دیگر تعمیراتی سامان موجود ہونے کی وجہ سے لوگوںکو تکلیف دہ حالات کا سامنا کرناپڑ رہا ہے ۔ دو نوں فلائی اوروںپر متعلقہ کمپنی اور حکومت کے در میان آپسی رسہ کشی کے نتیجے میں تعمیراتی کام بند ہے۔فلائی اور پر کام معطل رہنے کے نتیجے میں سڑکوں پر بھاری مقدار میں لاہا اور تعمیر کے لئے دیگر ضروری ساز و سامان بکھرا پڑا تھا جس کے نتیجے میں ٹریفک کی آواجاہی میں کافی دقتیں پیش آرہی ہے ۔ حال ہی میں جہانگیر چوک سے حیدر پورہ کی جانب جارہی ایک منی بس کو حادثہ پیش آیا جس کے نتیجے میں کئی مسافر زخمی ہو ئے ۔یہ بات قابل زکر ہے کہ مزکورہ تعمیراتی کمپنی دو نوں فلائی اوروں کو مقررہ مدت کے اندر مکمل کر نے میں ناکام رہی ہے جس کے نتیجے میں عوامی حلقوں میں شدید ما یوسی پائی جارہی ہے جبکہ گاڑیوں کی آمد و رفت میں بھی دقتیں پیش آرہی ہے اورآئے روزٹریفک جام کی صورتحال درپیش رہتی ہے۔اس دوران ڈائریکٹر’ ایرا‘‘نے  بتایا کہ دو نوں فلائی اوروں کے علاوہ گریڈ سپریٹر ٹی آر سی پر کام کاج جاری ہے اور متعلقہ تعمیراتی ایجنسی کو ہدایات دی گئی ہے کہ نٹی پورہ فلائی اور کو اگست تک مکمل کیا جائے جائے۔(کے این ایس)